Hadiths Of

انفرادی اخلاق
دیگر اخلاقی پستیاں
بنیادی عقائد
داخلہ اردو
الإمام علي (عليه السَّلام):
إنَّ الشَّقِيَّ مَن حُرِمَ نَفعَ ما اوتِيَ مِنَ العَقلِ و التَّجرِبَةِ.
امام علی (علیہ السلام):
یقیناً بدبخت وہ ہے جسے عقل اور تجربہ میں سے جو دیا گیا ہے، اس کے فائدے سے محروم ہوتا ہے۔
اصلی الفاظ:
ماخذ: نهج البلاغه جلد1 صفحہ465

الإمام علي (عليه السَّلام):
الشَّقِيُّ مَنِ انخَدَعَ لِهَواهُ و غُرُورِهِ.
امام علی (علیہ السلام):
بدبخت وہ ہے جو اپنی خواہش اور غرور کا گرویدہ ہے۔
ماخذ: نهج البلاغه جلد1 صفحہ116

رسول الله (صلی الله علیه و آله):
إنّ أقرَبَكُم مِنّي غَدا و أوجَبَكُم عَلَيَّ شَفاعَةً: أصدَقُكُم لِسانا، و أدّاكُم لِلأمانَةِ، و أحسَنُكُم خُلُقا، و أقرَبُكُم مِنَ الناسِ.
پیغمبراکرم (صلی اللّٰہ علیہ وآلہ وسلّم):
یقیناً کل (قیامت کے دن) تم میں سے میرے زیادہ قریب اور تم میں سے جس کی شفاعت مجھ پر زیادہ واجب ہے وہ ہے جو تم میں سے زبان کے لحاظ سے زیادہ سچا ہو، اور جو تم میں سے سب سے زیادہ امانت ادا کرے، اور جو تم میں سے سب سے زیادہ اخلاق کے لحاظ سے بہتر ہو، اور جو تم مِں سے سب سے زیادہ قریب ہو۔
ماخذ: الامالی، شیخ صدوق نمبر598

رسول الله (صلی الله علیه و آله):
لا شَفيعَ أنجَحُ مِنَ التَّوبَةِ.
پیغمبراکرم (صلی اللّٰہ علیہ وآلہ وسلّم):
توبہ سے زیادہ نجات دینے والا شفیع نہیں ہے۔
اصلی الفاظ:
ماخذ: بحار الانوار جلد8 صفحہ58

رسول الله (صلی الله علیه و آله):
ثلاثةٌ يَشفَعُونَ إلى اللّهِ عَزَّوجلَّ فَيُشَفَّعُونَ: الأنبياءُ، ثُمّ العُلَماءُ، ثُمّ الشُّهَداءُ.
پیغمبراکرم (صلی اللّٰہ علیہ وآلہ وسلّم):
تین (گروہ) اللہ عزّوجل کی بارگاہ میں شفاعت کریں گے تو ان کی شفاعت قبول کی جائے گی: انبیاء، پھر علماء، پھر شہدا۔
اصلی الفاظ:
ماخذ: الخصال، شیخ صدوق جلد1 صفحہ156

الإمام علي (عليه السَّلام):
أوَّلُ ما يَجِبُ علَيكُم للّهِ سبحانَهُ، شُكرُ أيادِيهِ وابتِغاءُ مَراضِيهِ.
امام علی (علیہ السلام):
پہلی چیز جو تم پر اللہ سبحانہ کے بارے میں واجب ہے، اس کی نعمتوں کا شکر اور اس کی رضا تک پہنچنا ہے۔
اصلی الفاظ:

رسول الله (صلی الله علیه و آله):
مِن علاماتِ الشَّقاءِ: جُمُودُ العَينِ، و قَسوَةُ القَلبِ، و شِدَّةُ الحِرصِ في طَلَبِ الرِّزقِ، و الإصرارُ على الذَّنبِ.
پیغمبراکرم (صلی اللّٰہ علیہ وآلہ وسلّم):
بدبختی کی علامتوں میں سے ہیں: آنکھ کی خشکی، اور دل کی سختی، اور رزق حاصل کرنے میں شدت سے لالچ کرنا، اور گناہ پر اصرار۔
ماخذ: الخصال، شیخ صدوق نمبر243

الإمام علي (عليه السَّلام):
وقد سُئلَ عن أشقَى الناسِ: مَن باعَ دِينَهُ بِدُنيا غَيرِهِ.
امام علی (علیہ السلام):
اور بدبخت ترین آدمی کے بارے میں پوچھا گیا (تو فرمایا): جو شخص اپنا دین دوسرے کی دنیا کو بیچ دے۔
اصلی الفاظ:
ماخذ: الامالی، شیخ صدوق نمبر478

:
أشقَى الناسِ مَن هُو مَعروفٌ عندَ الناسِ بِعِلمِهِ مَجهولٌ بِعَمَلِهِ.
:
سب سے زیادہ بدبخت شخص وہ ہے جو اپنے علم کے ذریعے لوگوں کی نظر میں پہچانا ہوا ہو، اپنے عمل کے ذریعے انجان ہو۔
اصلی الفاظ:
ماخذ: بحار الانوار جلد2 صفحہ52

الإمام علي (عليه السَّلام):
تَوَقَّوُا المَعاصِيَ واحبِسُوا أنفُسَكُم عنها؛ فإنَّ الشَّقِيَّ مَن أطلَقَ فيها عِنانَهُ.
امام علی (علیہ السلام):
گناہوں سے پرہیز کرو اور اپنے نفسوں کو ان سے روکو، کیونکہ بدبخت وہ ہے جو اپنی لگام کو ان (گناہوں) میں آزاد چھوڑ دے۔
اصلی الفاظ:

دائرہ تلاش

امام
پیغمبراکرم (صلی اللّٰہ علیہ وآلہ وسلّم)
امام علی (علیہ السلام)
حضرت فاطمہ زہرا (سلام الله علیہا)
امام حسن (علیہ السلام)
امام حسین (علیہ السلام)
امام سجاد (علیہ السلام)
امام باقر (علیہ السلام)
امام جعفر صادق (علیہ السلام)
امام کاظم (علیہ السلام)
امام رضا (علیہ السلام)
امام جواد (علیہ السلام)
امام هادی (علیہ السلام)
امام حسن عسکری (علیہ السلام)
امام مهدی (علیہ السلام)

زبانیں
English
فارسـی
Español
Pусский
العربیـه
اردو
Français
 汉语
Indonesia
Türkçe

مضامین